علاقائیقومی

ہائیکورٹ بینچ،وکلا کا ایک ہفتہ ہڑتال ،وزیراعظم سے ملاقات کا فیصلہ

حکومت نے احتجاج کرنے والے وکلا کیخلاف کارروائی کی تیاریوں کو حتمی شکل دے دی

فیصل آباد،سرگودھا (خصوصی رپورٹر، سٹاف رپورٹر، خبر نگار)فیصل آباد اورسرگودھامیں ہائیکورٹ بنچ کے قیام کیلئے وکلا کا احتجاج چوتھے روز بھی جاری رہا جس کے باعث سائلین خوار ہوگئے ، ہزاروں کیسز میں سماعت کیلئے نئی تاریخیں دیدی گئیں، حکومت نے احتجاج کرنے والے وکلا کیخلاف کارروائی کی تیاریوں کو حتمی شکل دے دی۔ ڈسٹرکٹ بارفیصل آبادنے ہائیکورٹ بینچ کے قیام کیلئے ایک ہفتہ کی ہڑتال کا اعلان کر دیا ، وکلا کل سے 24نومبر تک عدالتوں میں پیش نہیں ہو نگے ۔بار انتظامیہ اور فیصل آباد ڈویژن کے صدور وسیکرٹریز کااجلاس چودھری عبدالسلام کی سربراہی میں ہوا جس میں ہائیکورٹ بینچ کے قیام کیلئے جلد وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کرکے مطالبہ ان کے سامنے رکھنے اور کسی عدالت کو تالا نہ لگانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں روزانہ 12بجے دن سیشن کورٹ گیٹ تا چوک گھنٹہ گھر تک ریلی نکالنے اورعدالت میں پیش ہونے والے وکیل کی بار ممبر شپ منسوخ کرکے لائسنس منسوخی کیلئے ریفرنس پنجاب بار کو بھجوانے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ ڈسٹرکٹ بار نے سیشن کورٹ کے احاطہ میں موجود سائلین کو با ہر نکال کر گیٹوں کی تا لہ بندی کردی اور عدا لتی عملہ کو محبوس بنا کرشد ید نعرہ بازی کی۔ ڈسٹرکٹ بار کے وفد کی طرف سے ڈپٹی کمشنر کے ساتھ معذرت کے معاملہ پر صدر بار اور سیکرٹری آمنے سامنے آگئے ،سیکرٹری نے معاملے کو بار کے اجلاس میں اٹھانے کا عندیہ دیدیا ۔سرگودھا میں دوسرے روز بھی عدالتوں کی تالا بندی کی گئی،وکلا سیشن عدالتوں،اِنسداد دہشتگردی، اینٹی کرپشن اور بینکنگ کورٹس میں پیش نہیں ہوئے ،4ہزار سے زائد کیسوں کی نئی تاریخیں دیدی گئیں ، وکلا کے 40 رکنی وفد نے گورنر پنجاب سے ملاقات کی، صدر سرگودھا ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن عنصر خان بلوچ نے کہاہائی کورٹ بینچ کا مسئلہ وکلا اور لوگوں کی موت اور زند گی کا مسئلہ ہے ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker